بدھ, نومبر 28, 2007

نغمہ استقبالیہ (Welcome Song)

نغمہ استقبالیہ

یہی ہے راہ، معرفت ، ہے منزلوں کا یہ نشاں

ہے فکرو فن کا یہ جہاں ، حکمتوں کا راز داں

علم کی ہے یہ زمیں ، فضیلتوں کا آسماں

مہک اٹھی فضائیں بھی ہر ایک سمت روشنی

مرحبا اس انجمن میں آمد آپ کی

خوش آمدید خوش آمدید

قدم قدم ہے فرش گل ،نظر نظر ہے کہکشاں

نگاہِ دلنواز میں بلندیاں ، تجلّیاں

ہے اک خرا مِ ناز سے یہ قافلہ رواں دواں

دیارِ علم و فضل میں ہے آمد اک بہار کی

مرحبا اس انجمن میں آمد آپ کی

خوش آمدید خوش آمدید

یہ پتّیاں ، یہ کونپلیں ، یہ برگِ گل ،رویدگی

یہ فرشِ خاک ، یہ زمیں ، نموپزیر زندگی

بشارتِ جہانِ نو ، نوید ہے بہار کی

نگاہ و دل ہے فرشِ گل ،ان آہٹوں پہ آپ کی

مرحبا اس انجمن میں آمد آپ کی

خوش آمدید خوش آمدید


1 تبصرہ: