بدھ, نومبر 07, 2007

مرزاغالب اورآم (Mirza Ghalib)

مرزا غالب

مرزا غالب، اردو کے شاعر
آموں کے بھی رسیا تھے
اک دن
اک صاحب کے ساتھ
جنھیں آموں سے
اتنی ہی چڑ تھی
بیٹھے گفتگو فرمارہے تھے
غالب
آموں کی خوبیاں اور
وہ خامیاں گنوا رہے تھے
تبھی سڑک سے
گزرتے ہوئے
چند گدھوں نے
وہاں پڑے ہوئے
آم کے چھلکوں کو سونگھا
اور یہ دیکھ کر
کہ آم ہیں (کچھ خاص نہیں)
آگے نکل گئے
وہ صاحب
اچھل کر بولے
: دیکھا غالب
پتہ نہیں تمہیں آم ہیں
کیوں اتنے بھاتے
ارے !
آم تو گدھے تک نہیں کھاتے
مرزا غالب نے
سر ہلا کر فرمایا
ہاں حضور !
آپ سچ ہی ہیں فرماتے
بے شک،
گدھے آم نہیں کھاتے !


کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں