بدھ, نومبر 21, 2007

کچھوا دھیرے چلتاکیوں (Why is a tortoise so slow?)

کچھوا دھیرے چلتاکیوں

بچّہ

کچھوے بابا! کچھوے بابا!

پیٹھ پہ پیالہ الٹا کیوں ؟

اک ٹوپی کے اندر ہی

سر رہتا ہے دُبکا کیوں ؟

دھیرے دھیرے چلتے ہو

ڈرے ڈرے سے رہتے ہو

کچھوا

اوپر والے ہی نے مجھ کو

جیسا بھی ہوں بنایا ہے

خول حفاظت کی خاطر یہ

آسمان سے آیا ہے

میرا جرم ہے دھیرے چلنا

کوئی اسکی سزا نہ دے

راہ کا روڑا کہہ کر مجھ کو

رستے ہی سے ہٹا نہ دے

اسی لئے میں ڈرتا ہوں

خول میں دبکا رہتا ہوں

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں