ہفتہ, نومبر 03, 2007

بِھنڈی بولی ٹِنڈے سے (Bhindi Boli Tinde Se!)

بِھنڈی بولی ٹِنڈے سے

بھنڈی بولی ٹنڈے سے ؛
”اکڑرہے ہو ٹھنڈی سے!
آئے کہاں سے ہو بابو ؟“

ٹِنڈا بولا ؛
”میں آیا جی ، بھٹِندے سے “
بھنڈی نے پھر منھ کھولا ؛
”کب سے ہو اس منڈی میں؟“

بولا؛
”پچھلے سنڈے سے “
’دوستی بھی ہے کسی سے کی؟
”بس مرغی کے انڈے سے“
”ڈرتے بھی ہو کسی سے تم‘
جی بائی جی! ڈنڈے سے

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں