اتوار, ستمبر 18, 2011

yeh gulistan hamara..قومی گیتو ں کا مقابلہ

















مولانا ابوالکلام آزاد ہا ئی اسکول و جو نیئر کالج ،ناگپورمیں
قومی گیتو ں کا مقابلہ



ناگپور :اردو کے مشہور شاعروں کے قومی گیت طلباء نے

اپنی مترنم آ وازمیں پیش کئے ،میں تمام طلبا وطالبات کو مشورہ دوں گا کہ وہ دوسرے شاعروں کی تخلیقات کا مطالعہ کر نے کے ساتھ ہی خود بھی ایسی نظمیں لکھیں اور اپنے وطن کے بارے میں اپنے خیالات اور حب الوطنی کے جذبات کا اظہار کریں، اس سے بھی زیادہ اہم یہ ہے کہ اپنے ملک کی ترقّی اور سربلندی کے لئے ہم محنت کریں قر بانیاں دیں ۔"ان خیالات کا اظہار مراٹھی کے مشہور ناقد ،مصنف ، اور شاعر یشونت منوہر نے ایم۔ اے۔کے۔ آزاد ہائی اسکول و جونئر کالج ،گاندھی باغ میں منعقدہ قومی گیتوں کے سالانہ مقابلے ۔۔۔"یہ گلستان ہمارا" میں کیا۔ اس تقریب کی صدارت کے فرائض اسی اسکول و کالج کے پرنسپل جناب اسدا للہ خاں انجام دے رہے تھے ۔طلباء و طالبات کے ذریعے تلاوتَ کلامِ ربّانی ،حمد اور نعت کے سے جلسہ کاآ غاز ہوا ۔ ڈاکٹر اسعد حیات نے اس مقابلے کے جج جناب وکیل نجیب،ڈاکٹر شائستہ جبیں اور سمیر کبیر کا تعارف پیش کیا او پروگرام کے کنوینر معروف ڈراما نگار جناب ضیا اللہ لو دھی نے اس مقابلے کے اصول و ضوابط بیان کئے جس میں ناگپور و کامٹی کی اسکولوں او ر جو نئر کالجوں کے طلباء و طالبات نے گروپ کی شکل میں اردو کی مقبول قومی منظومات پیش کر کے آ زاد کلچرل ہال میں کثیر تعداد میں موجود طلباء او ر اساتذہ کو اپنی مترنم آ واز سے مسحور کردیا۔اس مقابلے کی نظامت محترمہ مقیم ا لنساء نے کی ۔تقریب کے دوسرے مرحلے، جلسہٗ تقسیمِ انعامات میںماہنامہ قرطاس ،ناگپور کے مدیر ،محمّد امین الدین ،جدید شاعر شکیب غوثی اور بابا پٹیل صاحب بطور مہمانان خصوصی موجود تھے ۔

جناب انعام الرحیم اور جناب فیروز پٹھان نے مہمانوں کو متعارف کر وایا۔ اس تقریب کی نظامت کے فرائض معروف ادیب ڈاکٹر محمّد اسدا للہ نے انجام دئے اور غرض و غایت بیان کر تے ہو ئے کہا کہ ہمارے طلبا میںحب الوطنی کے جذبات پید کرنے کے لئے قومی یکجہتی پر مبنی ہمارے ادبی وشعری سرمائے سے انھیں واقف کروانا وقت کی ایک اہم ضروت ہے ۔موسیقی کے ماہر استاد بابا پٹیل صاحب نے پیش کی گئی قومی منظومات کا فنّی اعتبار سے تجزیہ کیا اور اسکول کے سپر وائزر جناب انور خان نے طلباء کو مفید مشوروں سے نوازا۔قومی گیتوں کے مقابلے میں شامل دس اسکولوں میں سے حجانی خدیجہ بائی اسکول کامٹی کو اوّل نیشنل ہا ئی اسکول کو دوّم اور مولانا ابوالکلام آ زاد ہا ئی اسکول کو تیسرے انعام کا مستحق قرار دیا گیا۔


صدرِ جلسہ جناب اسداللہ خان نے اردو اداروں سے اپیل کی کہ وہ طلباء کی ہمہ جہت ترقّی کے لئے منعقد کئے جا نے والے مقابلوں میں تعاون کریں ۔ رسمِ شکریہ جناب اشرف علی نے انجام دی ۔اس تقریب کو کامیابی سے ہمکنار کر نے کے لئے جناب ضیا اللہ خان لودھی ، ڈاکٹر اسدا للہ، محترمہ عفیفہ وکیل ،تسنیم انیس اور رفعت انصاری نے بھر پور کو ششیں کیں ۔

اتوار, ستمبر 11, 2011

Hamdo Sana Usi Ki



Hamd

By:
MUHAMMAD ASADULLAH

Hamdo Sana Usi Ki Jis Ne Jahan Banaya
Mitti mien Jan Dali , Aarame Jan Banaya

Ghunche Khilaye Us Ne Pholon KoTazgi Di
Izhare Iltija Ko Hrfo Bayan Banaya.

Pairon Tale Hamare Mamta Bhari Zameen Di
Mushfiq Sa Apne Sar Par Ik Aasman Banaya

Raheen Usi Ki Sanat , Samtein Usi Ki Qudrat
Bakhshe Hain Ham Qadam Bhi Aur Karwan Banaya

Barbadiyon Mein Rakh Di Amno Aman Ki Soorat
Ishrat Kadon Ko Us Ne Ibrat Nashan Banaya

Lafzoon Ki Sari Duniya Us Ki Sana Se Qasir
Ik Lafze Kun Se Us Ne SaraJahan Banaya

جمعہ, ستمبر 09, 2011



Do what you can ,
with what you have,
where you are
By...........................Theodore Roosevelt

سوموار, ستمبر 05, 2011

WONDRES ARE MANY AND NOTHING IS MORE WONDRFUL THAN MAN .

.........SOPHOCLES