اتوار, مارچ 21, 2010

رات اک خاموش ہے ۔۔۔ نظم Rat Ik Khamosh Hai ..A poem in Urdu


رات اک خا موش ہے
ہہہہہہہہہہہہہہہہہہہہہہہہہہہ
سیما پٹھان 
ھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھھ
رات اک خا موش ہے
راستے پر 
آ ہٹیں گنتی ہو ئی 
 
آ سماں پر 
چاند کی محفل سجی ہے 
جھلملا تے ہیں ستارے 
گنگنا تی ہیں ہوائیں 

فاصلوں پر آ ہٹیں ہیں 
تیرے آ نے کی خبر دیتی ہو ئیں 

پاس آ تی بھی نہیں 
دور جا تی بھی نہیں 
مجھ کو یوں لگتا ہے جیسے 
میرے اندر 
رات اک خا موش ہے

راستے پر 
آ ہٹیں گنتی ہو ئیں 
دور تک 
کتنے تارے ،
کتنی آ نکھیں ۔،
راستے پر 
اپنی پلکوں کو بچھا ئے 
منتظر آ مد کی تیرے !


کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں