منگل, اگست 12, 2008

patriotic poem of Sardar Jafry

آزادی
اردو نظموں میں
(سردار جعفری کی نظم‘ اردو ’کے چند متفرّق اشعار )

ہماری پیاری زبان اردو ہمارے نغموں کی جان اردو
اسی زباں سے وطن کے ہونٹوں نے نعرۂ انقلاب پایا
اسی سے انگریز حکمرانوں نے خود سری کا جواب پایا
اسی سے میری جواں تمنّا نے شاعری کا رباب پایا
ہماری پیاری زبان اردو ہمارے نغموں کی جان اردو
یہ وہ زباں ہے کہ جس نے زنداں کی تیرگی میں د ءے جلاءے
یہ وہ زباں ہے کہ جس کے شعلوں سے جل گءے پھانسیوں کے ساءے
فرازِ دارو رسن سے بھی ہم نے سر فروشی کے گیت گاءے
ہماری پیاری زبان اردو ہمارے نغموں کی جان اردو
چلے ہیں گنگ و جمن کی وادی میں ہم تو بادِ بہار بن کر
ہمالیہ سے اتر رہے ہیں ترانۂ آ بشار بن کر
رواں ہیں ہندوستاں کی رگ رگ میں خون کی سرخ دھار بن کر
ہماری پیاری زبان اردو ہمارے نغموں کی جان اردو
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں